صفحہ اول / آرکائیو / ای سی سی نے پاکستان ایل این جی لمیٹڈ کو آذربائیجان کی سٹیٹ آئل کمپنی کے ساتھ فریم ورک معاہدے کی اجازت دیدی

ای سی سی نے پاکستان ایل این جی لمیٹڈ کو آذربائیجان کی سٹیٹ آئل کمپنی کے ساتھ فریم ورک معاہدے کی اجازت دیدی

اسلام آباد: کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے پاکستان ایل این جی لمیٹڈ کو آذربائیجان کی سٹیٹ آئل کمپنی کے ساتھ فریم ورک معاہدے کی اجازت دیدی ہے، ای سی سی نے نجکاری کمیشن کو ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کی نجکاری کا عمل رواں سال 30جون تک مکمل کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی کااجلاس بدھ کویہاں وزیر خزانہ سینیٹر محمد اسحاق ڈار کی زیرصدارت منعقدہوا۔

اجلاس میں وفاقی وزراء سید نوید قمر، خرم دستگیر خان، سید مرتضیٰ محمود، شاہد خاقان عباسی،وزیرمملکت ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، وزیر مملکت مصدق ملک، معاون خصوصی طارق باجوہ، وفاقی سیکرٹریز اور دیگر سینئر حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں وزارت توانائی کی سمری پرپاکستان ایل این جی لمیٹڈ اور آذربائیجان کی سٹیٹ آئل کمپنی کے درمیان معاہدے کے فریم ورک کا جائزہ لیاگیا۔

ای سی سی نے پاکستان ایل این جی لمیٹڈ کو آذربائیجان کی سٹیٹ آئل کمپنی کے ساتھ فریم ورک معاہدے کی اجازت دیدی۔ ای سی سی نے وزارت پٹرولیم کو تین ماہ ایڈوانس میں ایل این جی کی ضروریات کاجائزہ لینے کی ہدایت بھی کی۔ اجلاس میں چھ ایوی ایشن سکواڈرن کی مختلف ضروریات کی مد میں کابینہ ڈویژن کیلئے 404.76 ملین روپے کے تکنیکی ضمنی گرانٹ کی منظوری بھی دی۔

اجلاس میں ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کے ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی کی مد میں وزارت صنعت و پیداوار، بینک آف خیبر کو مارک اپ کی ادائیگی اور آپریٹنگ اخراجات کیلئے 157.73 ملین روپے کے اضافی فنڈز کی منظوری بھی دی۔ای سی سی نے نجکاری کمیشن کو ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کی نجکاری کاعمل رواں سال 30 جون تک مکمل کرنے کی بھی ہدایت کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے